پیار کی راہ میں مجھ کو یوں چھوڑنے والے

پیار کی راہ میں مجھ کو یوں چھوڑنے والے
پیار کی راہ میں مجھ کو یوں چھوڑنے والے
جا تجھے معاف کیا دل کو توڑنے والے

ستم ہے خدایا کیوں پیار بنایا جو لوٹے دل کا جہاں 
دل اتنا رولایا ہے غم مسکورایا کے اپنے ہیں انجان

ٹوٹ کر پیار کرے دل جو بکھر جاتا ہے
عشق تو سامنے آنکھوں کے مکر جاتا ہے

اپنی دھڑکن کو میرے دل سے جوڑنے والے
جا تجھے معاف کیا دل کو توڑنے والے

بوجھ ہے دل پے محبّت کا اتاروں کیسے
کہہ کے دو بول ایک عمر گزاروں کیسے

رکھ دے پیمانے پے اپنو کو تولنے والے
جا تجھے معاف کیا دل کو توڑنے والے

Comments