Ab teri arzo kahan mujh ko

اب تیری آرزو کہاں مجھ کو
اب میں تیری بات بھی نہیں کرتی

Ab teri arzo kahan mujh ko
Ab mein teri baat bhi nahi karti

Comments