Ajab aag badan me lagaye rakhte hain

Ajab aag badan me lagaye rakhte hain
Jo aashaq deda e tar se nikal nahi sakte

Bas eik Asam e judai hamain mukaddar hai
Isi k zer o zabar se nikal nahi sakte


عجیب آگ بدن میں لگائے رکھتے ہیں
جو اشک دیدۂ تر سے نکل نہیں سکتے
بس ایک اسمِ جدائی ہمیں مقدّر ہے
اُسی کے زیر و زبر سے نکل نہیں سکتے

Comments